Lahore Minar e Pakistan Girl Incident Ayesha Akram14 August

Latest news about Lahore Minar e Pakistan Girl Incident Ayesha Akram Tiktoker star faced very bad time when so many boys teased her and torn her clothes etc. Watch Ayesha Akram viral videos of 14th August 2021 (Saturday). This news going viral on social media Ayesha Akram 14th August incident at Minar-Pakistan Lahore Punjab Pakistan.

Lahore Minar e Pakistan Girl Incident Ayesha Akram14 August

Below read in Urdu that what are the real facts about Ayesha Akram at Minar e Pakistan Lahore and why peoples are saying that Aqrar ul Hassan member of Sar  e Aam team should be arrested right now.

Lahore Minar e Pakistan Girl Incident Ayesha Akram

This news about Ayesha Akram incident 14 August Minare Pakistan is not only going viral on social media Pakistan but also going viral on other countries news channel like Indian news channel and BBC America. Read minare pakistan ayesha akram real story listen her interview.

Ayesha Akram age is 28 years old read her biography pictures and video of Tik Tok. Ayesha Akram family detail residence, nationality, boyfriend name, father and mother name, husband and children name, what is her occupation profession.

#ayeshaakram

#minarepakistan

#viralcideos5iktokstar

#ayeshaakramminarepakistanvidoes

#minarepakistanayeshaakramrealstory

#aqrarulhassanarrest

=============================

وٹس ایپ پر دستیاب معلومات
۔۔۔
گوگلی و ٹک ٹاکری معلومات کے مطابق
لڑکی کا نام ہے عائشہ اکرم اور عمر ہے اٹھائیس سال وہ اپنے دوست کے ساتھ جی مکرر پڑھیے دوست کے ساتھ ٹک ٹاک بناتی ہے اس کا نام ہے سہیل اور ایک ان کا کیمرہ مین بھی صدام نام کا
اور ٹک ٹاک کس ٹائپ کی ہیں کسی میں ڈانس ہے تو کسی میں سہیل محترمہ کے گالوں پہ ہاتھ پھیرتا ہے تو کہیں محترمہ سہیل کے یہ سب پاکستان میں ہورہا ہے محترمہ کی والدہ ان سے ناراض ہیں اور ٹک ٹاک پر ایک لاکھ بیس ہزار کے قریب محترمہ کے فالورز ہیں

محترمہ ٹک ٹاک پر بتاتی ہیں کہ وہ مینار پاکستان جائیں گی تاکہ ان کے فالورز یعنی تماش بین پہلے ہی مینار پاکستان پہنچ جائیں پھر محترمہ وہاں دوستوں کے ساتھ انٹر ہوتی ہیں اور سہیل کی بانہوں میں لپٹ کر ٹک ٹاک بناتی ہیں ہر طرف لڑکوں کا ہجوم ہے دور دور تک کوئی اور لڑکی نہیں ہے اور لڑکے بھی سب ٹک ٹاکر اور یوٹیوبر ہیں جو پاں پاں کرنے اور کسی ایسی ویڈیو کی تلاش میں ہیں جو انہیں وائرل کرسکے کچھ ویوز مل سکیں

سو ایسے لڑکوں میں ایک لڑکی جس کے سینے کے گرد دوست نے بازو لپیٹے ہوں نشان عبرت بنے تو حیرت کیسی؟
لیکن رکیے نشان عبرت کیسی؟ وہ تو وائرل ہوچکی ہے اس کی فین فالونگ ایک لاکھ سے بیس لاکھ تک جائے گی اور یہی تو ٹک ٹاکرز کی منزل ہے اسی مقصد کے لیے کبھی وہ اپنی جھوٹی موت کی خبر دیتے ہیں تو کبھی اپنے سچے سکینڈل وائرل کرتے ہیں
اور یہ واقعہ محترمہ نے خود وائرل کیا ہے دو دن تک تو کسی کو پتا ہی نہ تھا کہ کیا واقعہ ہوگیا پھر محترمہ تھانے پہنچی ایف آئی آر کروائی اور مین سٹریم میڈیا کا ہائی لائٹ موضوع بن گئی

Ayesha Akram Sare Aam News channel

Lahore Minar e Pakistan Girl Incident Ayesha Akram
اب ان کی فین فالونگ دیکھ کر نہ جانے کتنی لڑکیاں بھرے مجمعوں میں گھسیں گے تاکہ ان کے ساتھ بھی کچھ ہو اور وہ بھی وائرل ہوں
اور حد یہ ہے کہ گالیاں ہمارے معاشرے کو پڑ رہی ہیں اور وہ لوگ دے رہیں جو اس سب فساد کی جڑ ہیں

A video attached below watch it and listen the voice of that girl Ayesha Akram Tik Tok incident at Lahore on 14th August 2021 Saturday. Ayesha Akram Yasir Shami Interview Daily Pakistan Aqrar ul Hassan Lahore Minar e Pakistan Girl Incident Ayesha Akram read in Urdu.

اک لڑکی اپنے ٹک ٹاک اکاؤنٹ پہ وڈیو اپ لوڈ کرتی ہے کہ میں 14 اگست کو مینارپاکستان پہ آ رہی ہوں سب لوگ آ جائیں مل کر ہلا گلا کریں گے لڑکی وہاں پہ گئی سب کے ساتھ وڈیو بناتی رہی اپنی مرضی کرتی رہی اور گئی بھی اپنے یار کے ساتھ جو اس کے ساتھ وڈیو بناتے رہے وہ ساری ٹک ٹاک کی اس کی اپنی برادری تھی یہ اپنی مرضی کے ساتھ گئی مرضی کے ساتھ وڈیوز بنوائیں اور جب ان سب کے درمیان کھڑی موج مستی کر رہی تھی لڑکے اس کے جسم کو جگہ جگہ سے ٹچ کر رہے تھے یہ اس وقت انجوائے کر رہی تھی جو بھی ہوا اس کے ساتھ وہ اس کی اپنی مرضی سے ہوا اس نے ان سب کو خود بلایا ہوا تھا
اب ان حضرات سے پوچھیں جو کل سے بکواس کئے جا ریے ہیں کہ عورت محفوظ نہیں ہے عورت کے ساتھ یہ ہوتا ہے پاکستان میں عورت کے ساتھ وہ ہوتا ہے مجھیں یہ بتائیں آپ لوگ بھی اپنی بہنوں اپنی بیویوں اپنی بیٹیوں کے ساتھ باہر نکلتے ہیں پبلک مقامات پہ جاتے ہیں کیا کبھی کسی کی جرات ہوئی کہ وہ آ کر کسی کو چھیڑ دے آپ کی بہن بیٹی کی طرف آپ کے ہوتے ہوئے گندی نظر اٹھا کے دیکھ سکے.یہ کرنے کا موقع آپ لڑکیاں خود لوگوں کو دیتی ہیں کیوں غیر محرم کے ساتھ باہر جاتی ہیں.مینار پاکستان پہ جو کچھ ہوا وہ غلط ہوا ٹھیک نہیں لیکن اس سب کی ذمہ دار وہ لڑکی خود ہے..
الحمداللہ میرے پاکستان میں عورت کی عزت محفوظ ہے جب تک وہ خود کسی کو بے عزت کرنے کا موقع نہیں دیتی.🔥

 

Ayesha Akram Yasir Shami Interview Daily Pakistan Aqrar ul Hassan

 

Minare Pakistan Ayesha Akram Real Story

Below read in Urdu that what are the real facts about Ayesha Akram at Minar e Pakistan Lahore and why peoples are saying that Aqrar ul Hassan member of Sar  e Aam team should be arrested right now.

نئے ہوشربا انکشافات ۔ #اقرارالحسن_کو_گرفتار_کرو ٹرینڈ کیوں چل رہا ہے
لاہور مینار پاکستان واقعہ اب آشکار ہو چکا ۔ ایک پلانٹڈ انٹرویو اور پلاننگ کے تحت یہ سب کیا گیا ۔۔ آئیے ذرا واقعات کی ترتیب دیکھتے ہیں ۔ ہر ایک ثبوت کے ساتھ
ٹک ٹاکر کے پارٹنر ریمبو کا اکاؤنٹ بند ہو گیا تھا
انہیں دوبارہ شہرت اور فالورز چاہیے تھے ۔ دونوں نے باقاعدہ ویڈیو بنا کر ایک بڑا ” سرپرائز” دینے کا اعلان کیا
یوم آزادی سے دو دن پہلے ویڈیو اپ لوڈ کی کہ وہ 14 اگست کو مینار پاکستان ویڈیوز بنائیں گے ۔ فینز وہاں آ جائیں
جب مینار پاکستان پہنچے تو دبنگ اینٹری ہوئی ۔ کچھ ساتھی اور فینز نے ویڈیوز بنائیں ۔ لڑکی خود کو بڑی سٹار سمجھ کر فینز کی خواہشات کے مطابق ویڈیوز بنواتی رہی۔ بقول ایک عینی شاہد ” فلائنگ کسز ” بھی دیتی رہی ۔
یہاں پھر ہلڑ بازی شروع ہوئی ۔ وہاں موجود انجان لڑکوں کے گروہ اس شغل میلے میں شریک ہوئے اور پھر وہاں بدتمیزی ہوئی ۔ جو واقعی افسوسناک اور شرمناک تھی ۔ان لڑکوں کے خلاف بھی کارروائی ہونی چاہیے ۔ جس کی ویڈیوز بھی بنیں ۔ پولیس کو کال کی گئی ۔ پولیس آئی ۔ ان کی جان چھڑائی ۔ تھانے پہنچ کر لڑکی نے کارروائی نہ کرنے کا کہا اور گھر چلی گئی ۔
اگلے دن اس نے نئے میک اپ اور سٹائل میں تصاویر بھی اپ لوڈ کیں ۔
یہاں تک معاملہ بظاہر ختم ہو چکا تھا ۔ سب بھول چکے تھے ۔
اسی دوران دوسرے اکاؤنٹس سے ہلڑ بازی اور بدتمیزی کی ویڈیوز وائرل ہو گئیں ۔
اب اینٹری ہوئی یاسر شامی اور اقرار الحسن کی ۔
انہیں اس واقعے میں ریٹنگ اور ویویوز ۔ ڈالرز نظر آئے ۔
انہوں نے ریمبو جو کہ اقرار الحسن کی ٹیم اعوان کا رکن ہے اس کے ذریعے لڑکی سے رابطہ کیا ۔ اسے یاسر شامی کے گھر بلایا گیا ۔ وہاں پلانٹڈ انٹرویو ریکارڈ ہوا ۔ لڑکی کو دوپٹے اور معصومیت میں دکھایا گیا۔ وہی لڑکی جو واقعہ بھول چکی تھی ۔ تھانے میں کارروائی نہ کرنے کا کہہ چکی تھی ۔ اسی نے ایف آئی آر درج کرائی ۔ 400 بندوں کو نامزد کیا ۔ یہ انٹرویو اور مینار پاکستان کی ویڈیوز تیزی سے وائرل ہوئیں ۔
ٹاپ ٹرینڈز بن گئے ۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل ۔ ہیومن رائٹس تنظیموں ۔ وزیراعظم ۔وزیر اعلی۔ سمیت ہر ایک کا ردعمل آیا ۔
اب پولیس حکام جب ایف آئی آر میں درج پتے پر گئے تو وہ جعلی تھا۔ اس پتے پر رہائش پذیر بوڑھے میاں بیوی پریشان ہیں کہ پولیس اور لوگ ان کے گھر کیوں آ رہے ہیں
جہاں انٹرویو ریکارڈ ہوا وہ بھی لڑکی کا گھر نہیں تھا
لڑکی کا گھر تو غریب گھرانہ تھا ۔
اس کے اصل گھر پولیس گئی ہے ۔ والدین کو ملی ہے ۔
تین گھر الگ الگ ہیں
انٹرویو والا یاسر شامی کا گھر
ایف آئی آر والا شاہدرہ کا گھر جہاں بزرگ جوڑا رہتا ہے
اس کا اصل گھر قلعہ لچھمن سنگھ میں جہاں پولیس گئی

#اقرارالحسن_کو_گرفتار_کرو ٹرینڈ اس لئے چل رہا ہے کہ لوگ سمجھتے ہیں کہ یہ سب اس کا پلانٹڈ ڈرامہ تھا ۔ اس نے انٹرویو اور ٹویٹ میں کہا کہ وہ لڑکی کے گھر تسلی دینے آیا ہے ۔ حالانکہ انہوں نے خود لڑکی کو بلایا ۔ جب معاملہ ایک بار ختم ہو گیا تو انہوں نے اپنی ریٹنگ کے چکر میں اسے اٹھایا اور ملکی بدنامی کا باعث بنے ۔۔ ایف آئی آر میں غلط پتہ دیا گیا ۔ یہ نہیں بتایا کہ پہلے وہ لڑکی خود کارروائی نہ کرنے کا اعلان کر چکی ۔
یہ تھے اب تک کے انکشافات اور کہانی ۔۔ہر ہر موقعے کی ویڈیو یا تصاویر پوسٹ میں لگائی گئیں ہیں ۔

==========

عائشہ اکرم ٹک ٹاک کےلیے وڈیو بنانے مینار پاکستان پر گئیں.
اور دو دن پہلے سب کو وڈیو میسج دے کر وہاں آنے کے لئیے بولا
اس کی وڈیو بنی یا نہیں، لیکن لوگوں نے اس کے ساتھ اپنی کئی وڈیوز بنا لیں.
جیسے بائیک پہ سیفٹی کے لئیے ہیلمٹ ضروری ہے ویسے عورت کے لئیے پردہ بھی ضروری ہے ۔۔۔جب ڈریسنگ سنی لیون والی کریں گی تو فالورز بھی ویسے ہی ملیں گے
سوری یہ برا ہوا۔ لیکن یہ برا کام کسی مدرسہ میں ہوا ہے نہ کسی مسجد میں،
کسی مولوی نے کیا نہ کسی داڑھی والے نے.
اس کے باوجود کل سے ہر دوسری پوسٹ پر تنقید کے لیے اسلام اور مسلمان کا لفظ ہی استعمال کیا جا رہا ہے.
پلیززز ذرا ہتھ ہولا رکھیے.
ورنہ پتہ آپ کو بھی ہے۔
اگر نہیں پتہ تو میں بتاتی ہوں . پتہ ہے تو یاد دلاو کہ ٹک ٹاکر لڑکیاں فیم اور پیسے کے چکر میں کیا کیا کرتی ہیں۔
زوئی سمیت باوا جی سیالکوٹ سے باوا جی حاصل پور تک کی وائرل وڈیوز سے سبھی لطف اندوز ہو چکے ہیں۔ اور وڈیوز دیکھ کر یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ یہ کسی خفیہ کیمرے سے نہیں، بلکہ کسی ماہر مووی میکر سے خود بنوائی گئی ہیں. تاکہ کسی بھی طرح خود کو وائرل کیا جا سکے.

نوٹ: عائشہ اکرم کے بھائی اس پوسٹ سے دور رہیں۔اور ان باکس میسج کر کے بھائی ھونے کا ثبوت نہ دیں
مجھے پتہ ہے اب سبھی بھونڈ عائشہ اکرم کے بھائی بن کر سامنے آئیں گے۔ بہن بنانے کا مقصد بھی جن کا ٹھرک سے زیادہ کچھ نہیں ہے۔

لڑکی یہ کیوں نہیں جانتی کے میرا باپ بھائی وہی ہے جس کے اس کا جنم ہوا ہے
،کالج ،سکول ، یا آفس میں اگر کوئی اپ کو اتنا یقین دلاتا ہے کے وہ اپ کے بھائیوں سے بڑ کر ہے تو وہ لڑکی اس کو ٹھرک پوری کرنے کی خود اجازت دے رہی ہے ۔
ایک عورت ہونے کی حثیت میں ان سب حالات سے گزر چکی ہوں لڑکی اگر خود لباس ٹھیک نہیں پہنتی تصویریں بنوانا ہر مرد کے ساتھ آنا جانا فیم اور پیسے کے لئے کچھ بھی کرنا تو کل کو اگر اس کے ساتھ کچھ غلط ہوتا ہے تو ذمدار خود ہے نہ کے ریاست یا کوئی دوسرا ۔۔۔
کسی بھی واقعہ کی حقیقت جانے ایسے ہی پوسٹ لکھنے سے گریز کریں